اردو کہانی

جونولنکیسٹر کی درد بھری کہانی

جونولنکیسٹر کی درد بھری کہانی

معزز دوستوں: السلام علیکم دوستو عموما جس معاشرے میں رہتے ہیں وہاں یہی تصور کیا جاتا ہے کہ دنیا چاہے ہمارے کتنے ہی خلاف کیوں نہ ہو جائے مگر ہمارے والدین ہمیشہ ہمارے ساتھ ہماری طاقت اور ہمت بن کر کھڑے رہتے ہیں کیا یہ بات سوفصد سچ ہے یقین آپ چونک گئے ہونگےتاہم آج جو کہانی ہم آپ سے شیئر کرنے جا رہے ہیں وہ آپ کے نظریہ کو بدل کر رکھ دیگی اس کہانی کو سنکر آپ کو یہ بات تسلیم کرنی پڑے گی کہ یہ زندگی کبھی کسی کے لیے آسان نہیں ہوتی یہ ہمیشہ مشکلات اور رکاوٹوں سے بھڑی ہوتی ہے اور جو انسان ان سبھی مشکلات کا سامنا کرتے ہوئے اپنے مقاصد کو حاصل کر لیتا ہے وہی مقدر کا سقندرکہلاتا ہے آج کی اس پوسٹ میں ہم آپ کو جونولنکیسٹر  (jono lancaster) نامی اس لڑکے کی کہانی سنانے جارہے ہیں جسے آپ تاریخ کی نہایت درد بھری کہانیوں میں سے ایک تسلیم کرسکتے ہیں

 

 آج کے موضوع کا آغاز کرتے ہیں اردو میں۔

  دوستو جونولنکیسٹر (jono lancaster)  نامی یہ شخص ہماری کہانی کا ایک ایسا کردار ہے ۔ جسکے والیدین نے بھی اس سے کنارا کرلیا جس کی وجہ نہایت بے تکی تھی کہ عام بچوں سے الگ نظر آتا تھا جونولنکیسٹر انگلینڈ کا رہنے والا ہے یہ بچہ جیسے ہی پیدا ہوا تو اس کے ساتھ کچھ ایسا ہوا کہ کوئی انسان اپنے دشمن کے لیے بھی نہیں سوچ سکتا جونولنکیسٹر  (jono lancaster)  کو پیدائشی طور پر پراسرار بماری تھی جس کا کا نام ٹرائچری کولائن سینڈرو ہے اس بیماری کی وجہ سے ان کا چہرہ عام انسانوں سے کافی زیادہ مختلف تھا جیسے کہ آپ فوٹومیں دیکھ سکتے ہیں کہ ان کی دونوں آنکھیں اندر کی جانب دھسی ہوئی ہے۔ جب کہ مونھ باہر کی جانب نکلا ہوا ہے لیکن انکے ساتھ سب سے برا حادثہ اس وقت پیش آیا ہے۔ جب چھوٹی سی عمر میں ہی جونولنکیسٹر  (jono lancaster) کے ولیدین انہیں گھر سے نکالنے کا فیصلہ کرلیا اس وقت انکی عمر تقریبا ۳ سال کی قریب تھی ان کے والدین نے انہیں گھر سے نکلنے سے پہلے اخبار میں اشتہار بھی دیا کہ ہم اس بچے کو  گھر سے نکال رہے ہیں اگر کوئی اس بچے کو پالنا چاہتا ہے تو پالسکتا ہے۔ خوش قسمتی سے اس اشتہار کو دیکھ کر ایک خاندان سامنے آئے جو کافی تھا مگر اس جوڑے کی اولاد نہ تھی لہاذا انہوں نے جونولنکیسٹر (jono lancaster)  کو گود لے لیا اور یوں جونولنکیسٹر (jono lancaster) ایک فیملی کا چشموں چراگ بن گیا ۔ لیکن معاشرے نے اس انوکھے انسان کو کبھی تسلیم نہیں کیا جونولنکیسٹر  (jono lancaster) کا کہنا ہے کہ جب اسکول میں زیر تعلیم تھے توکچھ افراد نے پاگل کہا کرتے تھے  کوئی بھی ان سے بات نہیں کرنا چاہتا تھا یہاں تک کہ ان سے ملنا بھی کوئی نہیں چاہتا تھا انکے اسکول اور کالج میں بہت کم مگر کافی اچھے دوست تھے جو کہ ہر وقت ان کا ساتھ دیتے تھے۔ مگر جو افراد ان کے دل میں چھوپی محبت کی جگہ ان کے چہرے کو دیکھ کر مذاق اڑاتے تھے۔ یہ افراد ان پر بالکل بھی دھیان نہیں دیتے تھے انہوں نے ان سبھی افراد کو نظر انداز کیا اور زندگی میں آگے بڑھتے چلے گئے انہوں نے کبھی بھی پیچھے موڑ کرنہیں دیکھا جونولنکیسٹر  کا کہنا ہے۔ کہ وہ جب اسکول سے نکل کر اپنے کالج میں گئے تو وہاں بھی ان کی کہانی جیسی ہی تیسی تھی وہاں بھی انہیں انکے چہرے کی وجہ سے کافی تنگ کیا جاتا تھا سب انہیں دیکھ کر ان کا مذاق اڑاتے اور کہہ کہے لگاتے مگر انہیں اس بات سے بالکل بھی کوئی فرق نہیں پڑتا تھا اور یہ ہمیشہ اپنے کام سے کام رکھ تے تھے نارمل انسانوں نے انہیں کافی پریشان کیا جس کے دل میں جو آیا وہ ان کے مطالق بولتا گیا یہاں تک کچھ لوگوں نے یہاں تک کہہ دیا  کہ تمہارے جیسا بدصورت انسان اس دنیا میں کہیں بھی پیدا نہیں ہوا اس سے آپ اندازہ لگا سکتے ہیں۔ کہ لوگوں نے جونولنکیسٹر  (jono lancaster)  کو نیچا دکھانے کے لئے ان کے ساتھ کس حد تک برے رویئے کا اظہار کیا ہے۔ لیکن پھر بھی جو انسان اندر سے مضبوط ہوتے ہیں وہ کبھی بھی کسی کے سامنے  ہار نہیں مان تے اس لئےجونولنکیسٹر  (jono lancaster)  بھی کچھ ایسے ہی تھے انہوں نے دوسروں کی باتوں کو نظر انداز کر دیا اور جم جا کر خوب محنت کی اور اپنے جسم کو کافی خوبصورت بنا لیا لیکن پھر بھی جن افراد کو برائی کرنے کی عادت ہوتی ہے  وہ سارا دن برے کام ہی کرتے رہتے ہیں ایسے افراد کو برائی کئے بغیر سکون نہیں آتا۔  جونولنکیسٹر (jono lancaster)  کے مطالق بھی بہت سے افراد کافی طرح کا مذاق اڑانے والی باتیں کرتے تھے لیکن ان کی ایک بات جو سب سے اچھی تھی اور جس نے آج نے کامیاب انسان بنایا وہ یہ کہ کسی کی باتوں پر بھی غور نہیں کرتے تھے بلکہ ہمیشہ وہی کرتے تھے  جو انکے دل کو اچھا لگتا ہے۔ یہ دوسروں کی بجائے ہمیشہ خود کو خوش رکھنے کی کوشش کرتے تھے کیوں کہ ان کے نزدیک یہی چیز ہے جو فائدہ یا نقصان پہنچا سکتی ہے۔ آپ کو یہ جان کر حیرت ہوگی کہ اس وقت جونولنکیسٹر (jono lancaster)  کی شادی ہو چکی ہے اور انہوں نے اس لڑکی سے شادی کی ہے۔ جس کے ساتھ یہ پچھلے کافی وقت سے رہ رہے تھے ان کی بیوی ان سے بہت پیار کرتی انکی بیوی نے ہمیشہ ہر جگہ ان کا ساتھ دیا  اور کبھی بھی ان کے حوصلے پست نہیں ہونے دیا جونولنکیسٹر  (jono lancaster) کے پاس کبھی بھی پیسوں کی کوئی کمی نہیں تھی اس لیے انہوں نے کئی طرح کے کاروبار شروع کی اور سب کو اچھی طرح پائے تکمیل تک پہنچا یا۔ آپ کو شاید یہ جان کربھی حیرت ہو کہ ایک مرتبہ جونولنکیسٹر  کو اس چیز کا علم ہوا کہ آسٹریلیا میں بھی ایک بچہ موجود ہے جسے ٹرائچری کولائن سینڈرو ہے۔ اور اس کا چہرہ بھی انہیں کی ماند ہے تو یہ اس بچے سے ملنے کیلئے آسٹیرلیا چلے گئے یہ اس بچے سے ملے اور اسے ہمت دی کہ زمانے کی باتوں کو نظر انداز کرتے ہوئے ہمیشہ وہی کرے جو اس کا دل چاہتا ہے۔ اللہ پاک نے اسے جیسا بنایا ہے  یہ بہت پیارا ہے خوش قسمتی سے اس بچے کے والدین نے اسے تنہا نہیں چھوڑا تھا بلکہ وہ اپنے بچے سے کافی پیار کرتے ہیں اور یہ بچہ اپنے والدین کے ساتھ ہی رہیا تھا جونولنکیسٹر (jono lancaster) نےاس  بچے اور اس  کے والدین کی زیادہ مالی مدد بھی کی تھی ۔ معزز دوستوں آپ کو یہ جان کر یقینا حیرانی ہوگی کہ آج جونولنکیسٹر  (jono lancaster)  ایک مشہور شخصیت بن چکے ہیں یہ جہاں بھی جاتے ہیں عوام انہیں پہچانتے ہوئے ان کے ساتھ تصاویر بنوا تے ہیں۔ لیکن اس بات کو بھی نظر انداز نہیں کیا جا سکتا کہ اس وقت ان کی مدد کسی نے بھی نہیں کی جب ہر طرف ان کا مذاق اڑایا جا رہا تھا اس کے علاوہ ان کی زندگی میں ایک اور انتہائی برا واقعہ یہ بھی پیش آیا کہ جب انھوں نے اپنے حقیقی والدین سے ملنے کی کوشش کی اور فون پر میسج کئے پیغام بھیجوایا مگر نہ جانے کیوں ان کے والیدین جونولنکیسٹر  (jono lancaster)سے ملنے سے انکار کردیا جس کا انہیں کافی دکھ پہنچا یہاں تک کہ کوئی بھی نہیں جانتا کہ آخر کیا وجہ تھی جونولنکیسٹر (jono lancaster)  کے والیدین ان سے ملنا نہیں چاہتے تھے اس کہانی کو سنکر کر یہاں سوال یہ پیدا ہوتا ہے۔ کہ ہم انسانوں کو چھوڑ کر دوسروں کی فکر کیو رہتی ہے جیسے کہ ہم انسانوں میں کچھ افراد ایسے بھی ہوتے ہیں جنہیں دوسروں پر روب جمانا انہیں تنگ کرنا اچھا لگتا ہے۔ ہلاں کہ انسان کو ہمیشہ اپنی اوقات میں رہنا چاہیے انسان کو اپنی اوقات کبھی نہیں بھولنی چاہئے انسان کی اوقست مٹی ہے  مٹی سے پیدا کیا گیا ہے۔ اس لیے اس پر غرور نہیں بلکہ عاجزی ججتی ہے ۔  جی پیارے دوستو: آج کے پوسٹ میں بس اتنا ہی ہمیشہ کی طرح  ہمیں آج بھی امید ہے کہ آج کی اس پوسٹ نے آج بھی آپ کو بہت کچھ سوچنے اور سمجھنے پر مجبور کر دیا اگر آپ کے ارد گرد بھی اس طرح کے لوگ  موجود ہیں تو انہیں آپ کے نفرت یا مذاق کی نہیں آپ کی محبت کی ضرورت ہے۔ اور آپ کی محبت انہیں ایک کامیاب اور مضبوت انسن بنا سکتا ہے اسلئے اگر ؔآپ کے ارد گرد کوئی ایسا شخص نظر آئے تو اسکے ساتھ محبت کا اظہار کیا کریں ۔

یہ بھی پڑھیں:جانوروں کے درمیان ہونے والی جنگیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button